ٹیپو سلطان کا سفر آخرت

وہ عالمِ تصور میں میسور کے شیر کو ایک خوفناک دھاڑ کے ساتھ اپنے پرحملہ آور ہوتا دیکھ کر چونک جاتا تھا‘ اسکی سپاہ سرنگا پٹم کے میدان میں جمع ہونے والے سپاہیان اسلام کی نعشوں میں میسور کے شیر کو تلاش کر رہے تھے

مسلمانوں کے ملک میں پرندے بھوک سے نا مر جائیں

زیر نظر تصویر ترکی کی ہے جہاں ایک بہت پرانی اسلامی روایت ابھی تک زندہ ہے کہ جب سردی کا عروج ہو اور پہاڑوں پر برف پڑ جائے تو یہ لوگ چوٹیوں پر چڑھ کر اس وقت تک دانہ پھیلاتے رہتے ہیں جب تک برفباری ہوتی رہے۔ اور یہ اس لیئے ہے کہ پرندے اس موسم میں کہیں بھوک سے نا مر جائیں۔

پاپا نے پادری بنانا چاہا ۔۔۔مگر۔۔۔؟

میں اپنے کسی کام کے سلسلہ میں ’’تیونس‘‘ گیا۔ میں اپنے یونیورسٹی کے دوستوں کے ساتھ یہاں کے ایک گاؤں میں تھا۔ وہاں ہم دوست اکٹھے کھا پی رہے تھے۔ گپ شپ لگا رہے تھے کہ اچانک اذان کی آواز بلند ہوئی اللہ اکبر اللہ اکبر۔۔۔

داستان ایک متکبر کی

سبحان الله ! یہ تھا اسلام کا انصاف

میں اپنا ثواب نہیں بیچوں گا

عموریہ کی جنگ میں پیش آنے والا ایک دلچسپ واقعہ

مئی 25, 2011

Kash aap hotay_Dr Qadeer khan


Kah aap hotay
by Dr abdul Qadeer Khan on abbottabad operation and usama bin ladin.
what was the role of Army and airforce?
Sehar honay tak.
Dr. Abdul Qadeer Khan writes if Zulfiqar Ali Bhutto, General Zia ul Haq, Ghulam Ishaq Khan, General Mirza Aslam Baig or Abdul Waheed Karar will be there then no American was allowed to live and destroy Pakistan after event like 2nd May Operation.


 ڈاکٹر عبدالقدیر خان کے کالمز، ڈاکٹر قدیر کے کالمز، ڈاکٹر عبدالقدیر خان کے اردو کالمز، سحر ہونے تک، ذوالفقار علی بھٹو، جنرل ضیاالحق، غلام اسحاق خان، جنرل مرزا اسلم بیگ، جنرل عبدالوحید کاکڑ، امریکہ، پاکستان، ایبٹ‌آباد

  

0 comments:

ایک تبصرہ شائع کریں