ٹیپو سلطان کا سفر آخرت

وہ عالمِ تصور میں میسور کے شیر کو ایک خوفناک دھاڑ کے ساتھ اپنے پرحملہ آور ہوتا دیکھ کر چونک جاتا تھا‘ اسکی سپاہ سرنگا پٹم کے میدان میں جمع ہونے والے سپاہیان اسلام کی نعشوں میں میسور کے شیر کو تلاش کر رہے تھے

مسلمانوں کے ملک میں پرندے بھوک سے نا مر جائیں

زیر نظر تصویر ترکی کی ہے جہاں ایک بہت پرانی اسلامی روایت ابھی تک زندہ ہے کہ جب سردی کا عروج ہو اور پہاڑوں پر برف پڑ جائے تو یہ لوگ چوٹیوں پر چڑھ کر اس وقت تک دانہ پھیلاتے رہتے ہیں جب تک برفباری ہوتی رہے۔ اور یہ اس لیئے ہے کہ پرندے اس موسم میں کہیں بھوک سے نا مر جائیں۔

پاپا نے پادری بنانا چاہا ۔۔۔مگر۔۔۔؟

میں اپنے کسی کام کے سلسلہ میں ’’تیونس‘‘ گیا۔ میں اپنے یونیورسٹی کے دوستوں کے ساتھ یہاں کے ایک گاؤں میں تھا۔ وہاں ہم دوست اکٹھے کھا پی رہے تھے۔ گپ شپ لگا رہے تھے کہ اچانک اذان کی آواز بلند ہوئی اللہ اکبر اللہ اکبر۔۔۔

داستان ایک متکبر کی

سبحان الله ! یہ تھا اسلام کا انصاف

میں اپنا ثواب نہیں بیچوں گا

عموریہ کی جنگ میں پیش آنے والا ایک دلچسپ واقعہ

ستمبر 14, 2010

Quaid E Azam nai Farmaya


Great Quotations Of Quaid E Azam Muhammad Ali Jinnah

قائداعظم کے معالج ٹی بی اسپیشلسٹ ڈاکٹر ریاض علی شاہ لکھتے ہیں کہ ”ایک بار دوا کے اثرات دیکھنے کیلئے ہم ان کے پاس بیٹھے تھے،میں نے دیکھا کہ وہ کچھ کہنا چاہتے ہیں،لیکن ہم نے اُن کو بات چیت سے منع کررکھا تھا،اسلیئے الفاظ لبوں پر آکر رک جاتے تھے،اسی ذہنی کشمکش سے نجات دلانے کیلئے ہم نے خود انہیں بولنے کی دعوت دی،تو وہ بولے،”تم جانتے ہو،جب... مجھے یہ احساس ہوتا ہے کہ پاکستان بن چکا ہے تو میری روح کو کس قدر اطمینان ہوتا ہے،یہ مشکل کام تھا اور میں اکیلا اسے کبھی نہیں کرسکتا تھا،میرا ایمان ہے کہ یہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا روحانی فیض ہے کہ پاکستان وجود میں آیا،اب یہ پاکستانیوں کا فرض ہے کہ وہ اسے خلافت راشدہ کا نمونہ بنائیں،تاکہ خدا اپنا وعدہ پورا کرے اور مسلمانوں کو زمین کی بادشاہت دے، پاکستان میں سب کچھ ہے،اس کی پہاڑیوں ،ریگستانوں اور میدانوں میں نباتات بھی ہیں اور معدنیات بھی،انہیں تسخیر کرنا پاکستانی قوم کا فرض ہے،قومیں نیک نیتی،دیانت داری،اچھے اعمال اور نظم و ضبط سے بنتی ہیں اور اخلاقی برائیوں،منافقت،زر پرستی اور خود پسندی سے تباہ ہوجاتی ہیں ۔


Quaid-e-Azam's Message On Eid (october 24, 1947)




Quaid-e-Azam's Message On Eid (August 18, 1947)




























9 comments:

  1. v v v nice n touching......IMPRESSED :)

    جواب دیںحذف کریں
  2. i am proud of you Faraz bhaie keep it up
    best
    Regards
    SS

    جواب دیںحذف کریں
  3. ur hard work need to be praised but due 2lack of words i cnt explain ha ha (S.S) i wish u best of luck sain

    جواب دیںحذف کریں
  4. Meri payari behn k comments meray leay Degree ke haiseat rakhtay hain.
    ore behnon ke duaen sath hun to Insan akaila nahe hota.

    جواب دیںحذف کریں
  5. Salam, FARAZ AKRAM Bhai, may aap ka shukriya adaa nahi jarna chahta kiyyo kay may aap ka ahsaan nahi ootarna chahta aap nay hum aur mulk wo qoum per ahsaan-e-azeem kiya hay aur bohot oomda kaam karkay sachay muhib-e-watan honay ka suboot pesh kiya hay may aap ko salam pesh karta hoo.

    From= Hafeez Ullah Khan, District Bannu, KPK.

    جواب دیںحذف کریں
    جوابات
    1. وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته

      حفیظ بھائی بلاگ پر خوش آمدید
      آپ کی حوصلہ افزائی سے ہمیں مزید طاقت ملتی ہے،
      الله پاک آپ کو بے بہا خوشیاں عطا کریں، تشریف لاتے رہا کریں بلاگ پر

      حذف کریں